حالت ِ بیماری میں عورت کی ش رم گاہ کے اندر جو گولی رکھی جا تی ہے

آج ایک سوال آیا سوال یہ ہے کہ اگر حالتِ بیماری میں عورتوں کو جو د وا اندر کھانی پڑتی ہے اس حالت میں نماز کو ادا کرے یا قضا کر ے؟ چلتے ہیں اس سوال کے جواب کی جا نب۔

اس سوال کا جواب یہ ہے کہ ایسی حالت میں نماز پڑھ لے قضاء نہ کر ے اسی طرح ایک اور سوال آیا سوال یہ ہے کہ لیکوریا کا پانی اس طرح سے ہو کہ پاکی کی حالت میں نماز پڑھنا ممکن نہیں تو اس کا کیا حکم ہے چلتے ہیں اس سوال کے جواب کی جانب

اس سوال کا جواب یہ ہے کہ وہ ہر نماز کے لیے وضو کر ے اور اس کا وضو اس وقت ٹوٹے گا جب نماز کا وقت نکل جا ئے گا مثلاً سورج طلوع ہونے کے بعد اس نے نماز کے وضو کیا اب اس وضو سے ظہر کی نماز پڑھ سکتی ہےاس کا وضو اس وقت ٹوٹے گا جب ظہر کا وقت نکل جا ئے گا جب کہ اسے اس دوران لیکوریا کے عضر کے علاوہ موانیہ وضو پیش نہ آ ئے ورنہ وضو ٹوٹ جا ئے گا۔

اللہ پاک ہم سب کو دین کی سمجھ عطا فر ما ئے اور اس کے مطابق زندگی بسر کرنے کی توفیق عطا فر مائے۔

Leave a Comment