درودِ لکھی پڑھنے کے بیشمار فائدے

درود لکھی مسلمانوں کے مشہور بادشاہ سلطان محمود غزنوی کی طرف منسوب کیا جاتا ہے ۔سلطان محمود غزنوی کا معمول تھا کہ روزانہ صدق دل سے بطور وظیفہ ایک لاکھ مرتبہ حضور نبی اکرم ﷺ درود پڑھا کرتے تھے ۔اس طرح بیشتر وقت درود پاک کے پڑھنے میں گذر جاتا تھا جس کی وجہ سے امور سلطنت کو سرانجام دینے میں بہت کم وقت ملتا تھا اور وسیع وعریض سلطنت میں بعض اوقات انتظام درست نہ رہتا تھا ۔ ایک روز عالم خواب میں حضور ﷺ کی زیارت ہوئ اور آپﷺ نے خواب میں ہی سلطان محمود غزنوی کو یہ درود سکھایا اور فرمایا کہ نماز فجر کے بعد اسے ایک مرتبہ پڑھ لیا کرو تو ایک لاکھ مرتبہ درود پڑھنے کا ثواب ملے گا ۔یعنی اس درود پاک کو جتنی بار پڑھا جائے اُتنی لاکھ بار ثواب ملے گا سلطان محمود غزنوی نے اس درود پاک کو عام کیا اور دو سرے مسمان بھائیوں کو اس نعمت عظمیٰ حاصل کرنے کی تلقین کی ۔دورد پاک مغفرت اور گناہوں سے چھٹکارے کے لیے بہت اکسیر ہے۔اگر کوئی شخص چاہے کہ اس کے فوت شدگان آباو اجداد کی مگفرت ہوجائے اور عالم برزخ میں انہیں راحت ملے تو روزانہ گیارہ مرتبہ درود شریف چالیس روز تک پڑھے اس کے بعد کے حضور اس درود کے وسیلہ سے انکی بخشش اور مغفرت کی دُعا کرے

،انشاءاللہ ، انہیں معاف فرمائیں گےاور انکی قبر مثل جنت کا باغ ہوگی ۔ اس کو روزانہ ایک بار پڑھنے سے فلاح دارین حاصل ہوگی ۔تہجد کے بعد روزانہ گیارہ مرتبہ پڑھنے رزق میں اضافہ ہوتا ہے ۔جس گھر میں پڑھا جائے وہاں اتفاق اور برکت ہوتی ہے ۔ جس گھر میں بے سلوکی اور بے اتفاقی ہو اور آپس میں جھگڑا رہتا ہو اسے پڑھنے سے ربّ العزت اس گھر میں امن وامان اور آپس میں ہمدردی پیدافرما دے گا درود لکھی یہ ہے :اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِرَحْمَۃِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ فِضْلِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ خَلْقِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ عِلْمِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِکَلِمٰتِ اللّٰہ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ کَرَمِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِحُرُفِ کَلٰمِ اللّٰہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ قَطَرَاتِ الْاَمْطَارِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِاَوْرَاقِ الْاَشْجَارِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِرَمْلِ الْقِفَارِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ خُلِقَ فِی الْبِحَارِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ الْحُبُوْبِ وَالثِّمَارِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ وَسَلِّمْ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَدِ الَّیْلِ وَالنَّھَارِ اَظْلَمَ عَلَیْہِ الَّیْلُ وَاَشْرَقَ عَلَیْہِ النَّھَارٌ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِ مَنْ صَلّٰی عَلَیْہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِ مَنْ لَّمْ یُصَلِّ عَلَیْہِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِ اَنْفَاسِ الْخَلَآئِقِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِ نُجُوْمِ السَّمٰوٰتِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَلٰی سَیِّدِ نَا وَمَوْلٰینَا مُحَمَّدٍ وَعَلَى آلِ سَيِّدِنَا مُحَمَّدٍ بِعَدَ دِ کُلِّ شَیْ ءٍ فِی الدُّ نْیَاوَالْاٰ خِرَۃِ صَلَوٰتُ اللّٰہِ تَعَالٰی وَ مَلٰٓئِکَتِہٖ وَاَنْنِۢبیَآئِہٖ وَرُسُلِہٖ وَجَمِیْعِ الْخَلَآئِق عَلٰی سَیِّدِالْمُرْسَلِیْنَ وِاِمَامِ الْمُتَّقِیْنِ وَقَآئِدِ الْغُرِّالْمُحَجِّلِیْنَ وَشَفِیْعِ الْمُذْنِبِیْنَسَیِّدِ نَا وَمَوْلٰنَا مّحَمَّدٍ وَّ عَلٰٓی اٰلِہٖ وَاَصْحٰبِہٖ وَاَزْوَاجِہٖ وَذُرِّیّٰتِہٖ وَاَھْلِ بَیْتِہٖ وَاَھْلِ طَاعَتِکَ اَجْمَعِیْنَ مِنْ اَھْلِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِیْنَبِرِحْمَتِکِ یٰٓا رْحَمَ الرَّحِمِیْنَ وَیٰٓا َکْرَ مَ الْاَکْرَمِیْنَ وَصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلٰی سَیِّدِ نَا مّحَمَّدٍ وّ اٰلِہٖ َ وَاَصْحٰبِہٖ اَجْمَعِیْنَ وَسَلَّمَ تَسْلِیْمًا دَآئِمًااَبِدًاکَثِیْرًکَثِیْرً وَالْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْن۔اس درود پاک کو کثرت سے پڑھا کیجئے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Leave a Comment