رمضان گزرنے سے پہلے تین سو بار یہ پڑھ لیں گلاس کا پانی ساتھ رکھ کر یہ پڑھیں

اکثر آپ نے دیکھا ہوگا کہ جن لوگوں کے چہرے کی رنگت گندمی اور سیاہ ہو تب بھی ان کے چہرے کو دیکھ کر خوشی اور کشش محسوس ہوتی ہے ایسا کیا راز ہے اس میں ؟ تو اس کا رازاللہ سے لَو لگانے کا نتیجہ ہے کہ انسان کے چہرے پر نور آجاتا ہے ذکر و اذکار کرتا ہے اور ایسے اعمال کرتا ہے جن سے چہرے کی رنگت بھی سفید ہوجاتی ہے اور چہرے پر نور آنا شروع ہوجاتا ہے ۔

آج کل تو مرد بھی اپنی چہرے کو خواتین کی طرح دلکش بنانا چاہتے ہیں اور اس کے لئے کریموں کا استعمال کرتے ہیں لیکن وہ نہیں جانتے کہ ایک دوا اور کریم ایسی بھی ہے جو شانِ کریمی سے اپنے خاص بندوں کے چہروں کو روشن بنادیتی ہے ان کی صورت اور ان کی شخصیت میں جاذبیت پیدا ہوجاتی ہے ایسا حسن و جمال پیداہوتا ہے کہ نگاہ اس پر ٹک نہیں سکتی یہ مومنوں کے چہرے ہوتے ہیں جو اللہ سے محبت میں اللہ پر توکل کرتے ہیں انہیں دنیا کا کوئی لالچ نہیں ہوتا وہ دل سے اللہ کی عبادت اور اس کی تسبیح کرتے ہیں

اس وظیفے سے آپ کے چہرے سے ہر طرح کے داغ دھبے بھی ختم ہوجائیں گے اور چہرے کی رنگت بھی نکھر جائے گی اور آپ نے کرنا یہ ہے کہ ایک گلاس پانی کا لینا ہے رات سونے سے پہلے اور اس پر گیارہ گیارہ مرتبہ اول و آخر درود ِ پا ک اور پھر یہ دو اسم مبارک صرف ننانوے مرتبہ پڑھ لینے ہیں وہ دو اسماء یہ ہیں:یا اللہ ۔یامصوِّرُ

جب یہ اسم مبارک پڑھ لیں تو اس پانی پر پھونک مار کر پی لیں اور سوجائیں صرف سات دن آپ یہ عمل کرتے رہیں اور پھر صبح اٹھ کر شیشے میں خود کو دیکھ لیجئے گا انشاء اللہ چہرے کی رونق ہی بدل جائے گی اور اس کے ساتھ ساتھ نماز کی پابندی ضرور کیجئے گا کہ جو شخص وضو کرتا ہے تو وضو میں بھی اللہ تبارک وتعالیٰ نے ایک نور رکھا ہے

اس وظیفے کے ساتھ ساتھ آپ نے نماز کی پابندی کرنی ہے اور اس وظیفے کو کرنے کے ساتھ ہوگا کیا کہ آپ کی جیب پر اثر نہیں پڑے گا کہ جو لوگ کریموں اور بیوٹی پارلر کو استعمال کرتے ہیں

بیوٹی پارلر میں جا کر اپنی رقم کو پانی کی طرح بہاتے ہیں ان کی رقم بھی بچ جائے گی اور ان کا وقت بھی بچ جائے گا اور ان کے اللہ تبارک وتعالیٰ کے ساتھ تعلقات بھی قائم ہوجائیں گے کہ رب راضی ہوجائے گا تو سب راضی ہوجائیں گے ۔اسم المصور کی صفات کا تذکرہ کرتے ہوئے دنیا کے مصوروں کا فن دیکھا جائے تو وہ صورت گر نہیں ہوتے بلکہ صورت کی نقل کرنے والے ہوتے ہیں اور اس نقل کا اصل سے بس واجبی سا تعلق ہوتا ہے

جبکہ اللہ رحیم و کریم ایسا مصور لازوال ہے کہ اس نے کروڑوں ، اربوں کھربوں صورتیں بنا دیں اور ہر صور ت ایک دوسرے سے الگ، منفرد اور مثالی نظر آتی ہے۔ اسی طرح المصور کی کرشمہ سازی دیکھئے کہ شکم مادر میں کسی بچے کو جو چاہے شکل بخش دے ، چاہے گورا بنا دے، کالا بنا دے، عورت بنا دے یا مر د بنا دے جو چاہے وہ کرنے پر قادر ہے۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین

Leave a Comment