گندم کے آٹے کی روٹی کے نقصان ! ذیا بیطس ، مو ٹا پا اور ہائی بلڈ پریشر!

ہمارے ہاں سمجھا جاتا ہے کہ گندم بہت اچھی ہے گندم کی روٹی کھانے سے جسم میں طاقت آ تی ہے جسم مضبوط ہوتا ہے اور موٹاپا اور شوگر تو ہوتی ہی نہیں ہے اسی لیے کہا جاتا ہے کہ اگر آپ اپنا وزن کم کر نا چاہتے ہیں یا شوگر کو کنٹرول میں رکھنا چاہتے ہیں تو آپ کو چاول کھانے بالکل بند کر د ئیے چاہییں۔ اور صرف گندم کی روٹی ہی کھانی چاہیے لیکن کیا واقعی گندم اتنی ہی اچھی ہے آپ کو گند م کی حقیقت بتائیں گے۔ گندم نیوٹریشن سے بھر پور ہوتی ہے اگر سو گرام گندم کی بات کر یں تو سو گرام گندم کی بات کر یں تو ہمین اس میں تیراں اشاریا دو گرما پروٹین زیر و اشاریہ شوگر ملتے ہیں گندم کے اگر مین ہیلتھ فوائد کی بات کر یں تو یہ ہے گندم کا فا ئبر چکی کی آٹے میں فائبر موجود ہوتا ہے اسی لیے اگر آپ چکی کے آٹے کی بنی ہوئی روٹی کھاتے ہیں تو یہ روٹی آپ کی آنتوں میں آپ کے معدے میں کافی تیزی سے موو کرتی ہے۔

اس لیے گندم کے آٹے کی روٹی کھانے سے آپ کے ہاضمے کا نظام بہت بہترین رہتا ہے گندم کی روٹی کھانے سے آپ کی آنتیں صحت مند رہتی ہیں اور آپ کو آنتوں کے کینسر سے بچنے میں مدد ملتی ہے یہ تو بات رہی کہ گندم اور گندم کی روٹی کے کچھ ہیلتھ فوائد اب بات کر لیتے ہیں اس کے نقصانات کی اگر حال ہی میں تحقیق کی بات کر یں تو گندم اینٹی نیوٹرنٹ فورڈ قرار دیا گیا ہے کیونکہ اس میں موجود اجزاء ہمارے باڈی کو دوسرے مینر یلز کو جذب کرنے سے روکتا ہے۔ جس وجہ سے روٹی میں موجود نوے فیصد نیوٹریشن ہماری باڈی جذب نہیں کر پاتی۔ بلکہ روٹی کے ساتھ جو ہم چیزیں کھاتے ہیں نیوٹریشن سے بھر پور ان چیزوں میں موجود نیوٹریشن کو بھی ہماری باڈی کو ٹھیک طرح سے جذب نہیں کرنے دیتا اس لیے گندم کی روٹی میں جتنا مرضی مینرلز ہو ں یا نیوٹریشنز ہوں یہ کبھی بھی ہماری باڈی میں جذب نہیں ہو پاتے بلکہ پخانے کے راستے بنا ہضم ہوئے ہی نکل جاتے ہیں

گندم کی روٹی میں ایسے کمپاونڈز پائے جاتے ہیں جو ہماری ہیلتھ کو شدید نقصان پہنچاتے ہیں ان کمپا ؤنڈ میں بہت ہی زیادہ اجزاء موجود ہ ہوتے ہیں کہ جس کی وجہ سے ہماری صحت کو بہت ہی زیادہ نقصان پہنچتا ہے۔ یہ کمپاؤنڈر ہمارے سسٹم کو نقصان پہنچاتے ہیں۔ ان کمپاؤنڈز کی وجہ سے پی سی او ایس اور پی سو او ڈی جبکہ مردوں کے سینوں پر جو چربی ہے اس کی تعداد میں بہت ہی زیادہ اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ گندم پروٹین سے بھرپور ہوتی ہے۔ لیکن زیادہ تر لوگوں کی باڈی گندم کی روٹی کو ہضم ہی نہیں کر پا تی۔ جس کا نتیجہ سستی تھکاوٹ موٹاپا کی شکل میں نکلتا