جس کی طبیعت میں یہ چار باتیں ہوں تو سمجھ جاؤ کہ وہ شریف ہے

اگر تعلق رکھنا ہے تو جھگڑا کس بات کا ؟ اور اگر تعلق نہیں رکھنا تو جھگڑا کس بات کا؟ اور پھر کسی دن انسان چلتے چلتے خود سے مل جاتا ہے اور اس کے بعد پھر کسی کو کبھی نہیں ملتا۔۔ آپس کا اتفاق کچے گھروں کو قلعوں سے زیادہ مضبوط بنا دیتا ہے جن کی تربیت میں کمی رہ جاتی ہے وہ پھر ساری عمر لوگوں پر تہمت ، کردار کشی طعنہ زنی تعصب پھیلانے اور سکون برباد کرنے میں پیش پیش ہوتے ہیں۔

جو والد کی قدر کرتا ہے وہ کبھی غریب نہیں ہوتا اور جو ماں کی قدر کر تا ہے وہ کبھی بد نصیب نہیں ہوتا۔ کمزور لمحوں میں تسلی کے دو الفاظ بو لنے والا دل کے بہت قریب ہو جا تا ہے۔

بہت خاص ہوتے ہیں وہ لوگ جو آپ کی آواز سے آپ کی خوشی اور دکھ کا اندازہ لگا لیتے ہیں کمزور لوگ شاید اپنے لیے کھڑے نا بھی ہوں پر ان کے لیے ضرور کھڑے ہوتے ہیں جن سے محبت کر تے ہیں۔ محبت : اگر کسی غلط انسان سے ہو جائے تو ساری عمر کا روگ بن جاتی ہے اور محبت میں اکثر ایسا ہی ہوتا ہے کہ ہمیشہ غلط انسان سے ہوتی ہے۔

جب انسان ٹوٹ جاتا ہے تو تو تب ہی انسان کے اندر سے آواز نکلتی ہے کہ کوئی بات نہیں ” لوگ نہ سہی اللہ تو ساتھ دینے والا ہے ناں” جس کی طبیعت میں یہ چار باتیں ہوں تو سمجھ جاؤ کہ وہ شریف ہے 1۔ رحمت، 2۔علم، 3۔وفا، 4۔محبت اللہ پاک دیر تو کر سکتا ہے

لیکن بندے کو ما یوس نہیں کر سکتا۔ جب بیٹیوں کو رخصت کیا کر یں تو انہیں بتا یا کر یں کہ ہم نے انسان کا بچہ دیکھ کر رشتہ طے کیا ہے اگر جا نور نکل آئے تو واپسی کا دروازہ کھلا ہے واپس آ جا نا کیو نکہ شادی دوبارہ ہو سکتی ہے اور اسلام میں ایسی کوئی قید نہیں اور نہ ہی گھر کا ٹوٹنا برائی ہے زندگی ایک بار ملتی ہے اسے خود غرضوں اور نفسیاتی مریضوں کے لیے گنو ا نا جہالت ہے بیٹیوں کو صحیح معنوں میں محبت اور تحفظ دیں۔

سچی خوشی ہر اس کام سے ملتی ہے جو آپ دل سے کر نا چاہتے ہو۔

آپ کے اندر سے جسے کرنے کے لیے آواز آتی ہو پھر چاہے وہ کسی کی مدد کر نا ہو، کسی کا موڈ ٹھیک کر نا ہو، کسی کی اداسی دور کر نا ہو کسی کے چہرے پر مسکرا ہٹ لا نا ہو، اپنے لیے جینا ہو، خود سے کیے وعدے پورا کر نا ہو، یا چلتے چلتے فوجی کو سیلوٹ مارنا ہو۔ محبوب کی سالگرہ یاد رکھیے

لیکن اس کی عمر بھول جا ئیے امید اچھی رکھو، لیکن تیاری بر ے حالات کے حساب سے کرو۔ !! محبت جس شخص پر غالب ہو گئی اس میں دکھ محسوس کرنے کا جذبہ زیادہ ہوگا۔ اکثر لوگوں کی زندگیوں میں کچھ لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جن کو دیکھ کر دل سے آواز نکلتی ہے یا اللہ یا تو یہ سدھر جائے یا گزر جائے۔

Leave a Comment