سورہ اخلاص کی اہمیت

جو شخص دس بار سورہ اخلاص پڑھتا ہے اس کے لئے جنت میں ایک محل بن جاتا ہے عمر ؓ کہنے لگے کہ اے اللہ کے رسول ﷺ اس طرح تو ہم بہت سارے محل اپنے لئے تیار کرلیں گے یعنی بہت دفعہ ایسا ہی عمل کریں گے آپ نے فرمایا اللہ کے پاس اس سے بہت زیادہ ہے بہت اچھا ہے

یعنی تمہارے گمان سے کہیں زیادہ ہے اس کے پاس اور پھر آپ دیکھئے کہ ایک اور شخص کے بارے میں آتا ہے کہ وہ ایک بار ساری رات اسی سورت کی تلاوت کرتا رہا اسی کی تکرار اسی کی تکرار باربار کرتارہا قل ھو اللہ احد اللہ الصمد لم یلد ولم یولد ولم یکن لہ کفوا احد اور حقیقت یہ ہے۔

کہ اگر آپ کسی وقت دعاکرنا چاہیں اور اللہ کے قریب ہونا چاہیں اللہ تعالیٰ کی قدرت عظمت کا احساس اپنے دل میں بٹھانا چاہیں تو آپ کو کیا کرنا چاہیئے بغیر گنے کئی بار قل ھواللہ احد اگر آپ کو ریاکاری کا ڈر ہے شرک کا اندیشہ ہے شرک سے ڈرتے ہیں اپنے اندر اخلاص پیدا کرنا چاہتے ہیں تو اسی صورت کو پڑھیں باربار پڑھیں

اور پھر اس کی تاثیر آپ دیکھئے یہ کرنے سے پتہ چلتا ہے نبی ﷺ کو جب یہ بات پتہ چلی کہ وہ ساری رات یہی پڑھتارہا ہے تو آپ نے اس کو منع نہیں فرمایا اس لئے کہ اگر کوئی اس کو ایک سےز یادہ بار پڑھتا ہے تو کوئی منع نہیں ہے۔

لیکن اس کے لئے کوئی جگہ کوئی وقت کوئی گنتی کوئی ہندسہ کچھ مقرر نہیں کیونکہ ایک ہی آیت کا ایک سورت کا بار بار پڑھنا بار بار پڑھنا انسان کے اندر اس کا فہم زیادہ کرتا ہے اس کے اندر غوروفکر اور تدبر زیادہ ہوجاتا ہے تدبر کے لئے تکرار چاہئے ہوتی ہے بار بار پڑھو ہم توایک دفعہ قرآن پڑھتے ہیں اور اس کے بعد اوپر شیلف میں رکھ دیتے ہیں مکمل ہوگیا اب مزید اس سے کوئی کام نہیں

اس کی فضیلت یا اس کے بارے میں یہ بھی آتا ہے کہ یہ انسان کی بیماریوں کو دور کرنے والی ہے اب بیماریوں کو کیسے دور کرنے والی ہے سب سے بیماری اور علت کیا ہے شرک سارے غم ہی شرک کی وجہ سے آتے ہیں ساری مصیبتیں شرک کی وجہ سے آتی ہیں اللہ کی ناراضگی شرک کی وجہ سے آتی ہے

چاہے شرک اکبر ہو چاہے شرک اصغر ہو شرک اکبر تو بتوں کو پوجنا شرک اصغر ریاکاری کرنا دکھاوے کے کام کرنا اپنے نیک کاموں پر فخر کرنا لوگوں کو بتانا کہ میں کیساکیسا نیک ہوں تو اس کا علاج کیاہے؟کہ انسان قل ھو اللہ احد پڑھے ۔

Leave a Comment