باتیں جو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو سخت ناپسند

لازمی پتہ ہونے والی باتیں جو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو سخت ناپسند اور ان سے سخت نفرت تھی ۔اس کے بارے میں آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا اگر تم یہ پانچ چیزیں کرتے ہو تو اس کے بدلے میں تمہارے ساتھ پانچ انجام پیش آتے ہیں ۔

یعنی پانچ چیزیں جن کو اگر آپ اجتناب نہیں کرتے تو اس کے ردعمل میں آپ پر پانچ ایسی چیزیں مسلط کر دی جائیں گی جس سے نکلنا آپ کے لیے بہت مشکل ہو جائے گا ۔

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ اگر کوئی قوم وعدہ حلافی کرتی ہے اپنی زبان سے پھر جاتی ہے کسی کو دھوکا دیتی ہے تو اپنے کام سے برکت اٹھ جاتی ہے ۔

دوسری یہ چیز ہے کہ آپ ہم اپنی مرضی کے مطابق کسی بھی چیز کا فیصلہ لے لیتے ہیں جس کا ہمیں پتہ ہی نہیں ہوتا ہم لاعلم ہوتے ہیں

لیکن پھر بھی ہم فیصلہ لے لیتے ہیں ۔اس سے آپ کے معاملات اور آپ کے رزق میں تنگی آتی ہے ۔تیسری چیز جس کا خیال رکھنا ضروری ہے وہ ہے بے حیائی کسی کی قوم میں بے حیائی پھیل جائے تو وہ قوم برباد ہو جاتی ہے اور طاعون کی بیماری پھیل جاتی ہے ۔

چوتھی چیز یہ ہے کہ آپ نے کبھی اپنی زندگی میں امانت میں خیانت نہیں کرنی ناپ تول میں کمی نہیں کرنی ۔پانچویں چیز ہے جو نہ کرنے سے آپ صلی اللہ علیہ وسلم بہت سخت نفرت کرتے ہیں ۔وہ یہ ہے کہ زکوۃ ادا نہ کرنا ۔زکوۃ ہم پر اللہ کی طرف سے فرض ہے جو قوم زکوۃ دینے میں بخل کرتی ہے اس کے اوپر بھی انتہائی قسم کے عذاب آتے ہیں ۔

ہمیں چاہئے کہ جو چیزیں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو پسند نہیں ہیں ہم ان کو کرنے سے اجتناب کریں اور اللہ اور رسول کی راہ پر چلنے کی کوشش کریں ۔