ضدی اور چڑ چڑے بچوں کے لیے چینی کا وظیفہ۔ اس وظیفہ سے بچے آپ کی ہر بات مانیں گے۔

جو بچہ ضدی ہو، چڑ چڑا ہو، پریشان کرتاہو، اس کی نظر اتاریں۔ سات عدد سرخ مرچیں ثابت لے کر سورۃ القلم کی آخری دو آیات سات مرتبہ فی مرچ دم کریں اور بچے پر بھی دم کریں۔ اس طرح کل اُنچاس مرتبہ ہو گئی۔ بچے کے اوپر سے سات مرتبہ الٹا پھر سیدھا وار کر آگ میں جلا دیں۔ اگر اس کی بو حلق کو چڑھے تو سمجھیں۔ نظر اتر گئی ورنہ تین دن عمل کریں نظر سے محفوظ رہے گا۔

ضدی بچوں کے لیے وظیفہ کسی نماز کے بعد تین سو بار روزانہ اس اسم الٰہی( یَا رَءُوْفُ یَا حَنَّانُ یَا حَکِیْمُ)کو پڑھ دم شدہ پانی دیں اولاد کو فرمانبردار بنانے کا عمل اگر کسی کی اولاد کہنا نہ مانتی ہو‘ نافرمان ہو اور طرح طرح سے والدین کو تنگ کرتی ہو تو اس کیلئے باوضو اول و آخر گیارہ گیارہ بار درودشریف درمیان میں عَسَى اللَّهُ أَنْ يَجْعَلَ بَيْنَكُمْ وَبَيْنَ الَّذِينَ عَادَيْتُمْ مِنْهُمْ مَوَدَّةً ۚ وَاللَّهُ قَدِيرٌ ۚ وَاللَّهُ غَفُورٌ رَحِيمٌ(سورت ممتحنہ آیت نمبر سات سو مرتبہ روزانہ پڑھ کر چینی یا مصری پر دم کرتے رہیں اور گیارہ روز تک اسی چینی یا مصری پر دم کرتے رہیں اور گیارہ دن دم کرنے کے بعد اس چینی یا مصری کو شربت میں گھول کر یا چائے میں ڈال کر یا کوئی میٹھی چیز (حلوہ‘ سویاں‘ کھیر) میں ڈال کر سب بچوں کو کھلادیں۔

انشاء اللہ تعالیٰ سب بچے اطاعت گزار‘ فرمانبردار اور ماں باپ کا کہنا ماننے والے ہوں گے۔ -انشاء الله مجرب و آزمودہ عمل ہے جیسا کہ آپ بھی اس بات سے بہت ہی اچھے سے واقف ہیں کہ آج کل کے ماڈرن زمانے میں نسل کتنی ماڈرن ہو گئی ہے کوئی بھی یہ نہیں چاہتا کہ وہ اپنے ماں باپ کے اشاروں پر چلے اور نہ ہی ماں باپ آج کے کل کے اتنے سیانے ہیں کہ اولاد کو اپنی مرضی کے مطابق چلا سکیں اپنی مرضی کے مطابق چلانے سے کیا مراد ہے؟

اپنی مرضی کے مطابق چلانے سے یہ مراد ہے کہ ان کو اچھے برے کی تمیز سکھا سکیں ان کو اچھے برے کی پہچان بتا سکیں ان کو وہ سب بتا سکیں کہ جس چیز نے انہیں ساری زندگی بہت فائدہ دیا یا بہت نقصان دیا۔ مگر آج کل کے دور میں ایسا بالکل نہیں ہے ایسا نہ ہی ماں باپ کر تے ہیں اور نہ ہی آج کل کی نسل کر تی ہے ہر کوئی یہ سوچتا ہے کہ آج کا زمانہ بدل چکا ہے نسلوں کو اپنی مرضی کرنی چاہیے چاہے وہ زندگی گزارنے کے معاملات ہوں چاہے وہ شادی کے معا ملات ہوں بھلے کوئی بھی معا ملات ہوں۔

ہر کوئی ا پنی مرضی کر رہا ہے اور خاص طور پر چھوٹے بچے تو آج کل کے دور میں بہت ہی زیادہ چڑ چڑے ہو گئے ہیں۔ جس کی وجہ سے ہمارے آج کل کے والدین بہت ہی زیادہ پریشان ہیں تو ان والدین کے لیے ہمیں چاہیے یہ نسخہ جات یا وظیفے ان کو بتائیں جا ئیں تا کہ یہ والدین اس قسم کی پریشانی سے با ہر آ سکیں۔

Leave a Comment