ہمیشہ کےلیے جدائی کا لاجواب وظیفہ

جدائی کے حوالے سے ایک وظیفہ کا بتائیں گے ۔ کہ جس وظیفہ کے کرنے سے آپ دونوں افراد میں جدائی پیدا کرسکتے ہیں۔ یہ جدائی ہمیشہ کےلیے ہوگی۔ چند دنوں بعد دوبارہ آپ نے ان میں کسی قسم کا تعلق نہیں ہوگا۔ بلکہ ہمیشہ کےلیے جدائی کا یہ جو سلسلہ ہے۔ وہ ہوجائےگا۔ سخت نف رت اورجدائی ہوجائے گی۔ یہ وظیفہ آپ کسی وقت بھی کرسکتے ہیں۔ چاہے دن ہو یا رات ہو۔ اس وظیفے کو کسی بھی وقت کرسکتے ہیں۔

اس میں وقت کی کوئی قید نہیں ہے ۔ کوشش کریں کہ وظیفہ وضو کےساتھ کریں۔ بغیر وضو وظیفہ ہوسکتا ہے۔ لیکن اگرآپ وضو کرلیں گے توآپ کو فائدے بہت زیادہ ہوگا۔ جب وظیفہ کا اہتمام کرنے لگیں تو جس جگہ بیٹھنا ہے۔ اس جگہ پر بیٹھنے سے پہلے یا چلتے پھرتے بھی وظیفہ کیاجا سکتا ہے۔ اس وظیفے کو کرنے سے پہلے آپ نے ” یاقھار” ا س کا ورد کرنا ہے۔

اور کم سے کم اس کو گیارہ مرتبہ پڑھنا ہےاور تب اس جگہ پر بیٹھنا ہے۔ جہاں بیٹھ کر آپ وظیفہ کرنا چارہے ہیں۔ جو احباب اس کو چلتے پھرتے کرناچا ہیں تو وہ گیارہ بارپہلے “یاقھار” پڑھ لیں۔ اس کےبعد آپ نے یہ کرنا ہے کہ ” سورت فیل ” جو ہے۔ جو کہ آخری پارے کی سورت ہے۔ اس کو مکمل پڑھناہے۔ اور اس کو آپ نے اکیس مرتبہ پڑھنا ہے۔ اکیس مرتبہ سورت فیل پڑھنے کےبعد آپ نے یہ کرنا ہے۔

جب آپ سات مرتبہ پہلے پڑھ لیں۔ آپ نےپڑھنا ہے۔ ” یا قھرک ،یاقھار، یاجبار” یہ تین مرتبہ آپ نے پڑھناہے۔ پھر سورت فیل کو سات مرتبہ پڑھناہے۔ پھر ” یاقھرک ، یاقھار، یا جبار” پڑھناہے۔ پھر سورت فیل کو سات مرتبہ پڑھناہے۔ پھر ” یاقھرک، یا قھار، یا جبار” کو پڑھنا ہے ۔ پھر آپ نے گیارہ مرتبہ دوبارہ ” یاقھار” پڑھناہے۔ یعنی اول وآخر میں آپ نے گیارہ گیارہ مرتبہ ” یا قھار” اس کو آپ نے ضرور پڑھناہے۔

اور درمیان میں آپ نے سات سات مرتبہ کے تین فیکٹرز بنالیں۔ پہلے سات مرتبہ سورت فیل کو پڑھ لیں۔ پھر آپ نے تین مرتبہ ” یاقھرک ، یاقھار، یاجبار” کو پڑھنا ہے۔ پھر سات بار پڑھیں گے تو سورت فیل چودہ بار ہوجائےگی۔ پھر “یاقھرک ، یا قھار ، یاجبار” کو پڑھیں گے ۔ پھر سات مرتبہ سورت فیل کو پڑھیں گے ۔ تو اکیس مرتبہ سورت فیل مکمل ہو جائےگی۔

پھر تین مرتبہ ” یاقھرک ، یاقھار ، یاجبار” کو پڑھنا ہے۔ پھر گیارہ مرتبہ “یاقھار” پڑھ لینا ہے۔ یہ وظیفہ دو رشتوں کو ہمیشہ کےلیے ختم کرنےکے لیے، ہمیشہ ان میں جدائی کرنےکےلیے ، دن ہویارات ہو اس کوکسی بھی وقت کریں گے ۔ انشاءاللہ! و ہ ناجائز تعلقات ، وہ ناجائز رشتے ہمیشہ ہمیشہ کےلیے ختم ہوجائیں گے ۔ اور دوبارہ ان دونوں رشتوں میں ملنا وغیرہ کبھی نہیں ہوگا۔

Leave a Comment