سچا واقعہ اللہ کے بہت پسندیدہ 3 یاد کرو

بحثیت انسان اور انسانی ضروریات کےپیش نظر بعض اوقات ہمیں پیسوں کی ضرورت پڑجاتی ہے بعض اوقات ایسا بھی ہوتا ہے کہ ہمارے پاس پیسے خرچ کرنے کےلیے پیسے بھی نہیں ہوتے ۔ بعض اوقات انسان کومصیبت یا بیماری کھینچ لے۔ تو اس وقت اس کےپاس نہ کچھ ہوتاہے۔ اور نہ دوست اور رشتہ دار اور دوست احباب اس کی مدد کرپاتے ہیں۔ تو وہ ایسی صورتحال میں سخت پریشان ہوجاتا ہے وہ چاہتا ہے کہ کسی طرح بھی اس کےپاس پیسے آجائیں ۔

تاکہ اس کی ضروریات فوراً پوری ہوجائیں ۔ آج کل کے دور میں آپ کو بے شمار ایسے لوگ ملیں گے جن کو روحانی اور قلبی سکون میسر نہیں ہے۔ ہر وقت ان کی زبان پر پیسہ ، گاڑی ، بنگلہ ، کاروباراور اسی طرح کی باتیں کرتے ہوئے دکھائی دیں گے ۔ کوئی جسمانی بیماری کا شکار نظرآتا ہے تو کوئی گھریلو ناچاقی کی وجہ سے پریشان ہے۔ حتیٰ کہ آپ کڑوڑوں اور اربوں روپے کےمالک کے لو گ بھی دیکھیں تو وہ بھی پریشان نظر آئیں گے جنہیں رات کو سکون کی نیند میسر نہیں ہوتی۔

آج کل کےمعاشرے میں انسانیت نام کی چیز کہاں ملتی ہے ہر شخص ایک دوسرے سے آگے نکلنے کی دور میں اور اگراپنےپیارے پاکستان کی بات کی جائے تو پاکستان میں احساس اور انسانیت اپنی آخری سانسیں لیتی معلوم ہوتی ہے۔جہاں غریبوں کو حقار ت کی نظر سے دیکھا جاتا ہے اور مجبوروں کی مجبوری سے فائدہ اٹھانا تو عام سی بات ہے۔

آسمان سے باتیں کرتی مہنگائی سے احساس کمتری سمیت مختلف نفسیاتی بیماریوں اور ذہنی دباؤ کا شکار ہورہے ہیں۔ آج آپ کو ایک ایسا وظیفہ بتائیں گے کہ اگر آپ کسی مصیبت میں ہیں۔ پریشان ہیں۔ بیمار ہیں۔ یا گھر کے حالا ت سے کافی پریشان ہیں۔ اور آپ کی جیب ابھی تک خالی ہے توآپ اس وظیفہ پر فوراً عمل کرنا شروع کریں۔ جو کہ اللہ تعالیٰ کا عزت والا ، عظمت والا اور طاقت والا اسم مبارک ہے جس وقت آپ کو پیسے کی ضرورت پڑے اور ایسے پیسے دینے کےلیے کوئی تیار نہ ہو تو اس وقت یہ عمل کریں۔

یہ اللہ تعالیٰ کے تین نام ہیں۔ آپ ان ناموں کو یاد کرلیں۔ جیسے ہی ایمر جینسی میں پیسوں کی ضرورت پڑجائے توآپ اس عمل کو شروع کردیں۔ انشاءاللہ! فوری طور پر اللہ کی مدد نازل ہوجائے اور آپ کے پیسوں کی کمی بھی دور ہوجائےگی۔ اللہ تعالیٰ کے تین نام “المالک ” ، “الوھاب” ، “الرزاق” ہیں۔

یہ تین نام آپ نے یاد کرلیں۔ اور یہ نام اپنے بچوں کو بھی سکھائیں اور ان کو درس دیں۔ جب بھی تمہیں ایمرجینسی پیسوں کی ضرورت پڑجائے تو اللہ تعالیٰ تمہاری فوری غیبی مدد کریں گے ۔ ان ناموں کو پڑھنے کا طریقہ یہ ہے کہ آپ کو کسی سخت ترین حاجت میں پیسوں کی ضرورت پڑے گی دور دور تک کوئی نام ونشان نہیں ۔

کہ وہ کمی پوری ہوسکے اور اس وقت مکمل یقین اور بھروسے کےساتھ ” المالک ، الوھاب، الرزاق” کو ایک ساتھ ملا کرپڑھنا ہے اور تب تک پڑھتے رہیں ۔ تب تک آپ تنہائی میں موجود ہیں۔ آپ نے کم سے کم سو مرتبہ ان تین ناموں کو لازمی پڑھنا ہے۔ اگر زیادہ پڑھ لیں۔ تو بھی بہتر ہے مگر شرط سو بار پڑھنے کی ہے۔ آپ ان ناموں کو پڑھنا شروع کریں۔ وہاں اللہ کی مدد نازل ہوجائےگی۔

مجھے ابھی بھی یا د ہے کہ ایک مرتبہ سفر پر نکلا ۔ پنجاب کے شہر فیصل آباد جیسے ہی پہنچا تو میرے گاڑی کے میٹر نے باربار فیول کم ہونے کا آلارم دینا شروع کردیا۔ میں نے جیسے ہی پیسوں کے لیے ہاتھ جیب میں ڈالا ۔ تو مجھے لگا کہ میں پیسے گھر بھو ل کرآچکا ہوں۔ میں فوراً پریشان ہوگیا۔ یہ شہر میرے لیے اجنبی ہے۔ میں یہاں کسی کو جانتا تک نہیں ہوں۔ گاڑی میں پیٹرول بھی ختم ہورہا ہے۔

تب میں نے اللہ کو پکارا۔ ابھی پکارنا شروع کیا۔ ان تین ناموں ” المالک ، الوھاب ، الرزاق” کو پڑھتا رہا ۔ سامنے ایک پیٹرول پمپ نظرآیا۔ میں نے سوچااللہ ضرور بندوبست بنا لے گا۔ جیسے ہی پیٹرول کےلیے گاڑی کھڑی کی تو سامنے گاڑی والا جومیرا درس سنا کرتا تھا۔ اس نے پیٹرول پمپ والے سے کہا کہ پیچھے جو گاڑی آرہی ہے ان کا فیول میری جانب سے ہوگا۔

یہ بات اس وقت بتائی جب میں نے فیول بھروالیاتھا۔ مجھے اس عمل پر مکمل یقین تھا۔ کہ اللہ کریم وہ عطاکرے گا۔ جومیں سوچ بھی نہیں سکتا تھا۔ پھر اس نے ایسا ہی کیا۔ اس شخص کو میں جانتا بھی نہیں تھا۔ جیسے فیول بھر اوہ شخص میرے پاس آیا۔ اس نے میرے ماتھے پر بوسہ دیا۔ اور کہنے لگا اللہ کریم آپ کی نسلوں کو آباد رکھے۔ اللہ تعالیٰ آپ کا نصیب اچھا کرے ۔ میں دین سے بہت دور تھا میرے گھر کا ماحول بالکل ٹھیک نہیں تھا۔

ہر وقت لڑائیاں ہوتیں۔ سب گھر والے ٹینشن میں ہی زندگی گزار رہے تھے سکون نام کی کوئی چیز نہیں تھی۔ پھر ایک دن آپ کا لیکچر سنا جو میرا دل پر لگا میں تب سے دین کے بہت قریب آیا ۔ آج آپ کے در س کےبدولت مجھے پانچ وقت کا نماز ی بنا دیا۔ آپ کی عمل سے گھرمیں زندگی بدل گئی ۔ سکون قائم ہوگیا۔ گھر میں اب جنت جیسا ماحول قائم ہے۔

اس نے اپنی جبیب سے ایک تحفہ نکالا۔ اور کہا کہ میں نے سوچا ہوا تھا کہ یہ تحفہ آپ کودوں گا۔ اور اس تحفہ میں دس ہزار روپے تھے جو اس عمل کے پڑھنے سے پیسوں کی ضرورت کو پور ا کردیا۔

Leave a Comment