دس دن میں دولت کا سیلاب دیکھنا ہے تو یہ عمل کرو

بندہ بننا ہے خدا کا تو گدابن ان کا جو فقیروں کو شہنشاہ بنادیتے ہیں۔کوئی وظیفہ نہیں آپ اللہ تعالیٰ کے حکم سے دس دن بیس دن دیکھتے ہی دیکھتے آپ دولت کے زینے سیڑھیاں چڑھنا شروع کردیں گے ایسا ہی ایک جاندار اور زبردست عمل ہے کوئی محنت نہیں کوئی کچھ نہیں۔ انشاء اللہ تعالیٰ کبھی آپ کا رزق تنگ نہیں ہوگا کوئی برائی آپ کے ساتھ نہیں ہوگی اور آپ کبھی انشاء اللہ غربت میں نہیں جاؤ گے

اور اگر آپ غربت میں ہو تو انشاء اللہ تعالیٰ آپ نے اپنی آنکھوں سے دیکھنا ہے کہ آپ کس طرح اللہ تعالیٰ کے حکم سے رحمتوں اور سلامتیوں کے ساتھ امیری کی طرف جارہے ہیں ۔بندہ غریبی کی جو سیڑھی ہے کس وقت نیچے اترنا شروع ہوتا ہے ایک چیز آپ پکڑ لیجئے کسی سے بھی پوچھ لیجئے کوئی بھی بندہ ہے وہ آپ کو بتا دے گا

لیکن اگر آپ کو معلوم نہیں تو یہ پڑھ لیجئے بندہ غریبی کی سیڑھی کس وقت اترنا شروع ہوتا ہے اس وقت معمولی سی بات ہے یہ آپ کو بہت معمولی لگے گی لیکن یہ بہت ہی بڑی بات ہے

کہ بندہ غریبی کی سیڑھی اس وقت نیچے آنا شروع ہو جاتا ہے امیری سے غریبی کی طرف اور اگر غریب ہے تو پھر اس کا اور بھی برا حال ہوتا ہے کہ جب آپ کہیں جارہے ہو یا اپنے گھرمیں بیٹھے ہو تو آپ کے آگے کوئی سوال کرتا ہے کہ اللہ کے نام پر دے دیں تو کئی بار تو آپ نہیں دیتے یا کئی بار اس سے کہانیاں سنانا شروع کر دیتے ہو اوئے تو تو بڑا ہٹا کٹا ہے تو یہ ہے تو وہ ہے اس طرح کئی لوگ بات کرتے ہیں

وہ وقت ہوتا ہے وہ بڑا نازک وقت ہے وہ وقت ہوتا ہے جب بندہ غریبی کے نیچے آنا شروع ہوجاتا ہے بڑی پکڑ والی بات ہے یہ سوچئے کہ وہ مانگ رہا ہے چاہے وہ ہٹا کٹا ہی کیوں نہ ہو کام نہیں کرتااللہ تعالیٰ نے اس پر غریبی مسلط کی ہے یا وہ خود بھکاری بن گیا ہے اور بھکاری پن کا مظاہرہ کررہا ہے یا وہ کسی اچھے کام کو نہیں کرنا چاہتا تو اللہ کی اس پر آزمائش ہے ہم کون ہوتے ہیں اس کو باتیں سنائیں

اگر آپ نے اسے دینا ہے تو بسم اللہ پڑھئے اور دے دیجئے اگر نہیں دینا تو بالکل چپ کر جائیے یا معافی مانگ لیجئے کہ مجھے معاف کر دے اسے کبھی یہ نہ کہنا کہ بھئی تو یہ ہے تو وہ ہے یہاں سے ہماری غریبی کا آغاز ہوتا ہے۔دوسرا کام آپ یہ پکی عادت بنا لیں ایک پانچ روپے کا دانہ اگر پانچ کا نہیں ملتا دس روپے کا باجرہ یا روٹی کے ٹکڑے اپنی چھت پر صحن میں پھینک آیا کریں پانی کی کٹوری سے رکھ دیں

مٹی کی ہو جس طرح کی آپ چاہیں وہاں سے پرندے کھائیں پئیں یہ دنوں میں امیر ہونے والا عمل ہے دنوں دنوں میں انسان اس سے امیر ہوئے ہیں ہر قسم کی محتاجی اس سے دور ہوجاتی ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین