آپ ﷺ نے قسم کھا کر فرمایا کہ جبرائیل آئے اور فرمایا جو شخص یہ پانی پئے گا اس کے جسم سے ہر بیماری دور فرمادیں گے۔

آج سے اگر کچھ زمانہ پہلے دیکھا جائے تو ڈاکٹروں کی تعداد بہت کم تھی لیکن آج ڈاکٹروں کی تعداد دن بدن بڑھتی جارہی ہے بہت زیادہ بڑھتی جارہی ہے آج ڈاکٹروں کی تعداد بہت زیادہ ہے اور اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ ہمارے کھانوں میں شیطانی چیزوں کا عمل دخل ہے اور ہمیں یہ شیطانی چیزوں کا عمل دخل نظر نہیں آتا

اور دوسرا جب ہر طرف فتنوں کا دور ہو گناہوں کی اور وباؤں کی کثرت ہو گناہوں کی فضائیں عام ہوں تو ایسے وقت میں آج کا یہ افضل پانی والا عمل شفا ہے دوا ہے دعا بھی ہے غذا بھی ہے حفاظت بھی ہے کفایت بھی ہے مدد بھی راحت بھی ہے پھر اس پانی میں سکون بھی ہے چین بھی ہے راحت بھی ہے اس عمل کو اپنی زندگی کا حصہ بنالیجئے

اس پانی کو اپنی روز مرہ زندگی کے معمولات میں شامل کرلیں اگر آپ بیمار ہیں توآپ نے صرف یہ دم کیا ہوا پانی سات دن تک پینا ہے انشاء اللہ آپ کی ہر بیماری دور ہوجائے گی ہر تکلیف سے محفوظ ہوجائیں گے زندگی بھر کے لئے یہ پانی کافی ہے پڑھنا بھی ایک ہی دفعہ ہے اور خصوصا آج کا یہ وظیفہ لاعلاج امراض کے لئے نسخہ کیمیا بھی ہے اس پانی والے عمل کے بہت زیادہ فضائل ہیں

اگر آپ اس وظیفہ پر عمل کریں تو آپ کے گھر میں ہر قسم کی لڑائی جھگڑا ہر قسم کا فتنہ فساد کسی بھی قسم کی پریشانی کے لئے اگر آپ اس وظیفہ کو پڑھ کر پانی پر دم کر کے پی لیں گے تو اللہ پاک تمام طرح کی لڑائیوں سے فتنوں سے حاسدین کے حسد سے دشمنوں کے شر سے آپ کی حفاظت فرمادے گا

اس کے علاوہ اگر آپ اس پانی کو گھر کے چاروں کونوں پر چھڑک دیں تو آپ کے گھر جادو ہے تو وہ بھی انشاء اللہ جادو کے اثرات ختم ہوجائیں گے آپ کی اولاد نافرمان ہے پانی پر دم کریں اپنی اولاد کو پلا دیں

آپ کی اولاد آنکھوں کی ٹھنڈک بن جائے گی اگر کسی بھی قسم کی کوئی بیماری ہے تو یہ خاص عمل ایک خاص طریقہ سے پڑھنے سے انشاء اللہ ہر قسم کی بیماری سے بھی اللہ پاک آپ کو نجات عطا فرمائیں گے ایک اللہ والے فرمانے لگے کہ تین پانی سب سے زیادہ افضل ہیں ایک آب زمزم دوسرا وضو کا پانی اور تیسر بارش کا پانی اب بارش ایک ایسی چیز ہے جس کے ہر قطرے کے ساتھ فرشتہ اترتا ہے

یہ قدرت کی عظیم نشانیوں میں اہم نشانی آسمان سے بارش کا نزول جو انسانوں کے علاوہ روئے زمین پر بسنے والی تمام مخلوق کی زندگی اور بقا کا اہم حصہ ہے اور بارش کے قطرے قطرے میں رب کریم نے ایسی شفاء ایسی عنایات اور برکات چھپا رکھی ہیں کہ ہم اپنی کم علمی کی وجہ سے اس عظیم نعمت کو ضائع کردیتے ہیں اور اکٹھا کرنے کے بجائے ندی نالوں میں بہا دیتے ہیں ہم تو بچپن سے دیکھتے آرہے ہیں

کہ اباجان چھت پر بارش کے دوران بڑے بڑے برتن رکھدیا کرتے تھے اور اس پانی کو اکٹھا کر کے پھر کھانے پینے میں استعمال کرتے اور ایک خاص عمل کروا کر لوگوں کو یہ پانی استعمال بھی کرواتے اور الحمد للہ اس کے نتائج میں نے خود اپنے کانوں سے سنے اس لئے میں چاہتا ہوں کہ مخلوق خدا اس فیض عام سے بھر پور مستفید ہو اور لوگ اسے اکٹھا کر کے سارا سال شفائی خزانہ سے بیماریاں دور اور تندرست چاق و چوبند زندگی کا آغاز کریں بارش ہونا صرف پانی کا برسنا نہیں ہے یہ برکت کے خزانے ہیں یہ عافیت کے خزانے ہیں .

عطاؤں کے خزانے ہیں یہ رحمت کے خزانے ہیں یہ فضل کرم کے خزانے ہیں ہم تو بھولے ہی رہ گئے اور ایسا بھولے کہ بھول ہی گئے اور ہمیں تو پتہ ہی نہیں ہے کہ ہم اس بارش کے پانی کو پرنالوں سے گزار کر نالوں میں پہنچا رہے ہیں امام شافعی نے انس بن مالک ؒ سے روایت کی کہ انس کا بیان ہے کہ ہم لوگ رسول اکرم ﷺ کے ساتھ ہم کو بارش پہنچی تو رسول اکرم ﷺ نے اپنا کپڑا اتار دیا

اور فرمایا کہ اپنے رب کے قریبی وعدے کا انعام پاؤ بلکہ نبی ﷺ کا ارشاد ہے کہ جو شخص بارش کا پانی لے کر اس پر سورہ فاتحہ ستر مرتبہ سورہ اخلاص ستر مرتبہ اور معوذتین ستر مرتبہ پڑھ کر دم کرے تو آپ ﷺ نے قسم کھا کر ارشاد فرمایا کہ میرے پاس جبرائیلؑ تشریف لائے اور مجھے خبر دی کہ جو شخص یہ پانی پئے گا

اللہ تعالیٰ اس کے جسم سے ہر بیماری دور فرمادیں گے اور اسے صحت عطافرمائیں گے اور اس کے گوشت پوست اور اس کی ہڈیوں سے تمام بیماریوں کو نکال دیں گے ۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین